بنگلا دیش لیگ؛ فکسنگ کیسز کی پھر بازگشت سنائی دینے لگی

Spread the love

بنگلا دیش لیگ؛ فکسنگ کیسز کی پھر بازگشت سنائی دینے لگی

نئی فرنچائز سلہٹ اسٹرائیکرز نے پیشکش پر فوراً اینٹی کرپشن یونٹ کو چوکنا کردیا۔ بنگلا دیش پریمیئر لیگ میں ایک بار پھر فکسنگ کیسز 
بی پی ایل ماضی میں کرپشن اور فکسنگ کیسز کی وجہ سے کافی بدنام رہی ہے، اس بار خاص طور پر آئی سی سی اینٹی کرپشن یونٹ کی جانب سے ایونٹ میں شریک تمام پلیئرز، فرنچائزز اور بورڈ کو خبردار کیا گیا تھا کہ وہ کرپٹ سرگرمیوں کے حوالے سے انتہائی چوکنا رہیں۔

ایک بار پھر صحافیوں کی جانب سے بنگلہ دیش پرائمری کو نشانہ بنانے کی کوششوں کا مبینہ طور پر پتہ چلا ہے سلہٹ سٹرائیکر کو فکسنگ کی پیشکش کر دی گئی ہے

  ٹیم پہلی بار بی پی ایل کا حصہ بنی ہے، اسی کے ایک ڈائریکٹر کو فکسنگ کی پیشکش ہوئی جنھوں نے حکام کو رپورٹ کردی۔

آئی سی سی اینٹی کرپشن قوانین کے تحت اگر کسی بھی پلیئر، ٹیم و بورڈ آفیشل کو فکسنگ کی پیشکش ہو تو فوری طور پر رپورٹ کرنا چاہیے

ایسا نہ کرنے کی صورت میں مذکورہ تمام کھلاڑی اور آفیشلز کے خلاف بھی کارروائی ہوتی ہے
اسٹرائیکرکی بازگشت سنائی دینے لگی۔

ز کی جانب سے رپورٹ کے بعد یہ معاملہ اب اینٹی کرپشن یونٹ کے پاس چلا گیا جس نے بی پی ایل کی نگرانی مزید سخت کردی۔
سیڈ سٹیٹس اسٹرائیکر کے مالک سرور چوہدری نے فکسنگ کی آفر کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس حوالے سے رپورٹ کرنا ہماری ذمہ داری تھی

جو ہم نے پوری کردی . ایسی چیزیں کسی بھی صورت میں برداشت نہیں ہوتی کسی سے بھی

 

سلہٹ نے اپنے ابتدائی چاروں میچز میں کامیابی حاصل کی ہے، وہ اب تک ایونٹ میں واحد ناقابل شکست ٹیم ہے، پاکستان کے عماد وسیم اور محمد عامر بھی اسی کا حصہ ہیں


Spread the love

Add a Comment

Your email address will not be published.